1 مارچ, 2021
daa9d988d8a6d9b9db81 daafd984db8cda88db8c d8a7db8cd9b9d8b1d8b2 daa9d988 d8afd988 d985db8cda86d988daba d985db8cdaba d8b4daa9d8b3d8aa daa9
پی ایس ایلخبریںکھیل

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو دو میچوں میں شکست کس وجہ سے ہوئی؟ سابق کرکٹر کا انکشاف

سابق ٹیسٹ کرکٹر تنویر احمد نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد کو پی ایس ایل سکس کے گزشتہ دو میچز میں ہونے والی شکست کا ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام ہر لمحہ پرجوش میں گفتگو کرتے ہوئے سابق ٹیسٹ کرکٹر تنویر احمد نے کہا کہ پی ایس ایل سکس کے چوتھے میچ میں لاہور قلندر کے ہاتھوں کوئٹہ کی شکست کے ذمہ دار ٹیم کے کپتان سرفراز احمد ہیں۔

تنویر احمد نے کہا کہ جب کوئٹہ نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 178 رنز کا ٹارگٹ سیٹ کیا تو کپتان کو اندازہ ہو جانا چاہیئے تھا کہ بولرز کو مار پڑے گی اور وہی ہوا، لاہور قلندرز کے بلے بازوں کے ہاتھوں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے بولرز کی پٹائی پر سرفراز احمد کھبی سر پر ہاتھ رکھ رہے تھے تو کھبی بولرز کے پاس جا کر انہیں ڈانتے رہے، اس طرح کا رویہ ہو گا تو بولرز کو اعتماد کہاں سے حاصل ہو گا۔

daa9d988d8a6d9b9db81 daafd984db8cda88db8c d8a7db8cd9b9d8b1d8b2 daa9d988 d8afd988 d985db8cda86d988daba d985db8cdaba d8b4daa9d8b3d8aa daa9 1

سابق کرکٹر تنویر احمد کا کہنا تھا کہ جو باتیں میں نے کہی کمنٹری کے دوران بھی سرفراز کے اسی رویئے پر بات کی جا رہی تھی۔

سابق وکٹ کیپر راشد لطیف نے میچ کے دوران سرفراز کے تاثرات کو ان کی عادت قرار دیتے ہوئے کہا کہ جب سرفراز قومی ٹیم کے کپتان تھے تو وہ اسی طرح کے ردعمل کا اظہار کرتے تھے، یہ ان کا فطری عمل ہے۔

daa9d988d8a6d9b9db81 daafd984db8cda88db8c d8a7db8cd9b9d8b1d8b2 daa9d988 d8afd988 d985db8cda86d988daba d985db8cdaba d8b4daa9d8b3d8aa daa9 2

پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سابق وکٹ کیپر راشد لطیف نے کہا کہ جب سے پی ایس ایل دبئی سے کراچی منتقل ہوا ہے تو پرفارمنس کے لحاظ سے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے لاہور کی جگہ لے لی ہے، لاہور قلندرز کی ٹیم میں حفیظ کی شمولیت نے ٹیم میں بہتری پیدا کر دی ہے، یہی نہیں لاہور قلندرز اپنی ماضی کی غلطیوں کو دوبارہ نہیں دہرا رہی ہے۔

گزشتہ روز نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والے پاکستان سپر لیگ 6 کے چوتھے میچ میں لاہور قلندرز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو9 وکٹوں سے شکست دی تھی، لاہور قلندرز نے فخر زمان اور محمد حفیظ کی دھواں دھار بلے بازی کی بدولت 179 رنز کا مطلوبہ ہدف 18.2 اوورز میں ایک وکٹ کے نقصان پر حاصل کر لیا تھا، فخر زمان 82 اور محمد حفیظ 73 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے