25 جنوری, 2021
13
کراچیپاکستانسندھکاروبار

پی آئی اے نے گزشتہ ماہ کتنے ملازمین کو کس جرم میں نوکری سے فارغ کیا؟

تفصیلات کے مطابق پی آئی اے میں سزا و جزا کا عمل جاری ہے، نومبر کے مہینے میں 43 ملازمین کے خلاف ایکشن لیا گیا جن میں سے اٹھائیس کو ملازمت سے فارغ کر دیا گیا۔

ترجمان پی آئی اے عبداللہ خان کے مطابق پی آئی اے کے شبعہ ہیومن ریسورس نے ملازمین کے خلاف کی جانے والی کارروائی کی فہرست جاری کر دی ہے۔

فہرست کے مطابق پی آئی اے نے جعلی تعلیمی اسناد کے حامل 4 ملازمین کو فارغ کیا، قوانین کی خلاف ورزی اور احکامات نہ ماننے پر بھی 4 ملازمین کو برخاست کیا گیا، بغیر اطلاع کچھ عرصے سے غیر حاضر 8 ملازمین کو بھی نوکری سے نکالا گیا۔

14

پی آئی اے انتظامیہ نے مسافروں اور کنٹریکٹر سے رشوت لینے پر بھی 4 ملازمین کو فارغ کیا، سرکاری معلومات غیر قانونی طور پر افشا کرنے پر 2 ملازمین کو برطرف کیا گیا، بدعنوانی اور غبن میں ملوث 3 ملازمین کو نوکری سے ہاتھ دھونے پڑے، اسمگلنگ میں ملوث ایک ملازم کو بھی بر طرف کیا گیا۔

سرکاری دستاویزات کی چوری اور ریکارڈ کو نقصان پہنچانے پر 2 ملازمین کو برخاست کیا گیا۔

دوسری طرف پی آئی اے نے احکامات کے مطابق کام نہ کرنے پر 3 ملازمین کی تنزلی کر دی، ایس او پیز کی خلاف ورزی کر نے والے 3 ملازمین کی تنخواہ میں بہ طور سزا کمی کی گئی، 8 ملازمین کو تادیبی خطوط جاری کیے گئے، جب کہ 8 ملازمین ضابطے کی کارروائی کے بعد بے قصور پائے گئے۔

پی آئی اے نے اچھی کارکردگی کے حامل 9 ملازمین کو تعریفی اسناد بھی جاری کیں جبکہ 3 ملازمین کو کیش ایوارڈز بھی دیے گئے۔

ترجمان پی آئی اے عبداللہ خان کا کہنا تھا کہ مذکورہ تمام کارروائیاں قانون اور ضابطے کے مطابق کی گئیں، پی آئی اے میں بغیر کسی دباؤ کے سزا و جزا کا عمل جاری رہتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے