25 جنوری, 2021

تفصیلات کے مطابق ای او سی سندھ نے صوبے بھر میں 30 نومبر سے 6 دسمبر 2020ء تک پولیو مہم چلانے کا اعلان کیا، اس دوران صوبے کے 29 اضلاع میں پانچ سال سے کم عمر 90 لاکھ بچوں کو انسداد پولیو ویکسین کے قطرے پلائے جائیں گے۔

ای او سی سندھ کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ انسداد پولیو مہم کے دوران کرونا کی حفاظتی تدابیر پر عمل کیا جائے گا، پولیو ورکرز ماسک پہننیں گے جبکہ فیلڈ میں نکلنے سے قبل اُن کا بخار بھی چیک کیا جائے گا۔

اعلامیے کے مطابق عالمی ادارہ صحت کی جانب سے جاری کردہ گائیڈ لائن کے مطابق پولیو رضاکار بچوں کو براہ راست ہاتھ لگانے سے گریز کریں گے جبکہ وہ گھروں میں داخل نہیں ہوں گے اسی کے ساتھ کسی بھی گھر کے سامنے زیادہ وقت نہیں گزاریں گے اور دروازے کو قلم یا کہنی کی مدد سے کھٹکھٹائیں گے۔

اعلامیے کے مطابق کرونا وبا کی وجہ سے انسداد پولیو مہم مارچ سے جولائی تک ملتوی کی گئی تھی۔ ای او سی کے مطابق کراچی میں پانچ سال سے کم عمر 20 لاکھ سے زائد بچوں کو بھی پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں جائیں گے۔

واضح رہے کہ ڈبلیو ایچ او کی منظور شدہ پولیو ویکسین کی 10 ارب خوراکیں گزشتہ دہائی میں دنیا بھر میں 3 ارب بچوں کو دی گئیں ہیں جس کے نتیجے میں پولیو کے 10 ملین کیسز میں کمی واقع ہوئی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے