پیر, مئی 10
d8acdb81d8a7d986daafdb8cd8b1 d8aad8b1db8cd986 daa9db8cd8a7 daa9d8b1d986db92 d8acd8a7d8b1db81db92 db81db8cdabad89f d9bedb8c d9b9db8c d8a7
لاہورپاکستانخبریں

جہانگیر ترین کیا کرنے جا رہے ہیں؟ پی ٹی آئی کے ناراض رہنما نے بتا دیا

جہانگیر ترین کے حمایتی اور تحریک انصاف کے ناراض رہنما سلمان نعیم نے دعویٰ کیا ہے کہ بہت سارے ممبران جہانگیر ترین کی حمایت میں ہیں مگر ابھی وہ سامنے نہیں آئے۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام اعتراض ہے میں گفتگو کرتے ہوئے سلمان نعیم کا کہنا تھا کہ ’جہانگیر ترین نے اس ماہ کی21 تاریخ کو اراکین کے اعزاز میں افطار ڈنر کے پروگرام کا انعقاد کیا ہے، جس بعد مستقبل سے متعلق حتمی فیصلہ کیا جائے گا‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’آج دو اراکین اسمبلی جہانگیر ترین کی حمایت میں سامنے آ گئے، جن میں سے ایک قومی اور دوسرا صوبائی اسمبلی کا رکن ہے، بہت سارے ممبران ابھی سامنے بھی نہیں آئے، ممکن ہے وہ 21 اپریل کے بعد کھل پر اپنی حمایت کا اعلان کر دیں‘۔

سلمان نعیم کا کہنا تھا کہ ’جہانگیر ترین  نے ہمیشہ قانون کا احترام کیا اور وہ عدالت کے سامنے پیش ہوئے، وہ ان مقدمات کا سامنا کرنے کے بعد سرخرو ہوں گے‘۔

واضح رہے کہ آج لاہور کی بینکنگ کورٹ میں جعلی اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی، جس میں جہانگیر ترین پیش ہوئے۔

جہانگیر ترین جب عدالت پہنچے تو ان کے ہمراہ ایم این اے راجہ ریاض، عون چوہدری، چوہدری منظور، خرم لغاری، صوبائی وزیر ملک نعمان لنگڑیال، ایم این اے خواجہ شیراز، مبین عالم انور، سمیع گیلانی، فیض الحسن شاہ بھی تھے۔ مجموعی طور پر 21 اراکین صوبائی جبکہ 6 رکن قومی اسمبلی اور 2 وزرا بھی اُن کے ہمراہ تھے۔

عدالت نے دلائل کے بعد جہانگیر ترین، علی ترین، رانا نسیم اور عامر وارث کی عبوری ضمانت میں 3 مئی تک توسیع کر دی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے