26 جنوری, 2021
d8b3d8a7d984 2020 d985d984daa9 d8a8dabed8b1 d985db8cdaba d8b3d8a7d8a6d8a8d8b1daa9d8b1d8a7d8a6d985 daa9db8c d8b4d8b1d8ad d985db8cdaba 5
جرم و انصافپاکستانخبریںسائنس و ٹیکنالوجی

سال 2020ء : ملک بھر میں سائبر کرائم کی شرح میں 5 گنا اضافہ ریکارڈ

سائبر کرائم ونگ نے سال 2020ء کو سائبر کرائم سے متعلق مشکل ترین سال قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سال ملک بھر میں سائبر کرائم کی شرح میں 5 گنا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سائبرکرائم ونگ نے 2020ء کی رپورٹ جاری کر دی، جس میں بتایا گیا کہ ملک بھر میں سائبر کرائم کی شرح میں 5 گنا اضافہ ہوا، اس دوران ملک بھر سے سائبر کرائم کی 94 ہزار 227 شکایت موصول ہوئیں، جس میں خواتین کو بدنام کرنے، جنسی ہراسگی سے متعلق، چائلڈ پورنوگرافی، مالی دھوکہ دہی کے حوالے سے شکایات شامل ہیں۔

ترجمان ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کا کہنا ہے کہ مجموعی طور پر ایک لاکھ شکایات موصول ہوئی، جس میں سے 9037 شکایات کا ازالہ کیا گیا اور چائلڈ پونوگرافی کے خلاف 24 مقدمات درج کر کے 26 ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔

حکام نے بتایا کہ 22 گینگز کے 661 ملزمان کو گرفتار کر کے 2 لاکھ الیکٹرونکس آلات برآمد کئے، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے نام پر دھوکہ دینے والے 22 ملزمان کو گرفتار کر کے 40 لاکھ روپے برآمد کئے گئے۔

ترجمان نے سال 2020ء کو سائبر کرائم سے متعلق مشکل ترین سال قرار دیتے ہوئے کہا شکایات کے فوری ازالے کیلئے خصوصی حکمت عملی اختیار کر لی گئی ہے اور بچوں کے استحصال کے خلاف خصوصی ونگ نے کام شروع کر دیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے