0
0
0
خاتون کے بیٹے نے ماں سے اپنی ٹیچر کے لیے پھول خریدنے کی اجازت مانگی جو ماں کو ایک آنکھ نہ بھائی۔

شعیب سعید آسی

اسکول کی پسندیدہ ٹیچر سے طالب علم کی انسیت ماں کو ایک آنکھ نہ بھائی اوراس نے ٹیچر کے قتل کا منصوبہ بنالیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مانچسٹر کی رہائشی خاتون نے الزام لگایا کہ بچے اور ٹیچر کی محبت اس کی فیملی میں دراڑ ڈال رہی ہے جس بناء پر جنونی ماں نے ٹیچر کو قتل کرنے کا منصوبہ بنایا۔

خاتون کا پانچ سالہ بیٹا اپنی اسکول ٹیچر سے روزانہ فون پر بات کرتا تھا  جس پر اس کی ماں نہ صرف ٹیچر کے گھر پہنچ گئی بلکہ فون اور ای میل پر بھی ٹیچر پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔

خاتون کے بیٹے نے ماں سے اپنی ٹیچر کے لیے پھول خریدنے کی اجازت مانگی جو ماں کو ایک آنکھ نہ بھائی۔

خاتون کے ٹیچر کو قتل کرنے کے منصوبے کا پتا اس وقت چلا جب اس نے ڈاکٹر پاس جاکر اپنے منصوبے سے آگاہ کیا کہ وہ خاتون ٹیچر کو قتل کرنا چاہتی ہے کیونکہ وہ سمجھتی ہےکہ وہ جن مسائل اور پریشانی کا سامنا وہ کررہی ہے اس کی وجہ یہ خاتون ٹیچر اور اس کا رویہ ہے۔

انہی وجوہات کی بناء پر خاتون نے یہ منصوبہ بنایا جس سے وہ خاتون ٹیچر سے چھٹکارا پاکر اپنے بچے کو اپنے پاس رکھے۔

منصوبے کا پتا چلنے پر پولیس کو آگاہ کیا گیا جس پر پولیس نے خاتون کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا جہاں خاتون نے اپنے منصوبے کا اعتراف بھی کیا۔

عدالت نے قتل کا منصوبے بنانے پر خاتون کو 6 ماہ قید کی سزا سنادی۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس