0
0
0
پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتےہوئے اسپیکر قومی اسمبلی کے فیصلے کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

شعیب سعید آسی

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہےکہ پارلیمنٹ پر پارلیمنٹ کے اندر سے ہی حملہ کیا جارہا ہے، قانون کے تحت قائمہ کمیٹیوں پر پابندی نہيں لگائی جاسکتی ۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز قومی اسمبلی کے سیکریٹریٹ سے ایک اعلامیہ جاری کیا گیا تھا جس کے مطابق اسپیکر اسد قیصر نے قائمہ کمیٹیوں کے طلب کردہ تمام اجلاس منسوخ کرنے اور انہیں صرف قومی اسمبلی سیشن کے دوران بلائے جانے کی ہدایت کی۔

اعلامیے میں کہا گیا تھا اسپیکر نے یہ ہدایت کفایت شعاری مہم کے تناظر میں دی ہے تاہم ذرائع کے مطابق قائمہ کمیٹیوں کے اجلاسوں پر پابندی زیر حراست اپوزیشن ارکان کے باعث لگائی گئی کیوں کہ زیر حراست ارکان پروڈکشن آرڈر پر قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کرتے ہیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتےہوئے اسپیکر قومی اسمبلی کے فیصلے کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو سمجھنا چاہیے کہ پارلیمان کو چلانا کوئی کرکٹ میچ نہيں ۔

بلاول نے کہا کہ ایوان کو اسی طرح چلایا گيا تو اپوزيشن کے پاس آپشنز کم ہوتے جائيں گے ، اسپیکر کو فوری طورپر کمیٹیوں کے اجلاس سے متعلق فیصلہ واپس لینا چاہیے ۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس