جمعہ, ستمبر 24
d985d8b3d984d985 d984db8cdaaf d986 daa9db92 d8b3db8cd986d8a6d8b1 d8b1db81d986d985d8a7 daa9db8c d8aad8add8b1db8cdaa9 d8a7d986d8b5d8a7d981
خبریںاسلام آبادپاکستانسیاستکشمیر

مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما کی تحریک انصاف میں‌ شمولیت

d985d8b3d984d985 d984db8cdaaf d986 daa9db92 d8b3db8cd986d8a6d8b1 d8b1db81d986d985d8a7 daa9db8c d8aad8add8b1db8cdaa9 d8a7d986d8b5d8a7d981

اسلام آباد: آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے مسلم لیگ ن کے اہم اور سینئر رہنما نے ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کردیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) نے آزاد کشمیر میں پاکستان مسلم لیگ ن کی بہت اہم وکٹ ہفتے کے روز اُس وقت گرائی جب اہم اور سینئر رہنما نے اپنی سابق جماعت کو الوداع کہا اور عمران خان کے قافلے میں شامل ہوگئے۔

پاکستان مسلم لیگ ن آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے سینئر رہنما سردار طاہر اقبال نے وزیراعلیٰ پنجاب کے معاونِ خصوصی کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔

سردار طاہر اقبال کا کہنا تھا کہ ’مسلم لیگ ن چھوڑ کر آج پی ٹی آئی میں شامل ہو رہا ہوں،آزاد کشمیر میں انصاف کے اداروں کو متنازع بنایا جارہا ہے،راجہ فاروق حیدر نے شعبۂ تعلیم میں نالائق لوگوں کو مستقل بنیادوں پر ملازمت دے دی‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’حکومت نے آزاکشمیر کے نظام کو درہم برہم کر دیا ہے،راجہ فاروق حیدر عدالتوں میں بھی من پسند ججز کو تعینات کررہے ہیں، آزادکشمیر حکومت نے میرٹ کی پامالیاں کیں ہیں، 3 بار این ٹی ایس میں فیل ہونے والوں کو مستقل بنیادوں پر ٹیچر بنا دیا گیا’۔

وزیراعلیٰ پنجاب کے معاون خصوصی سردارتنویر الیاس نے پریس کانفرنس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’ سردارطاہراقبال کی طویل سیاسی جد وجہد ہے، وہ آزاد کشمیر کے سیاسی میدان میں نمایاں حیثیت رکھتے ہیں، سردارطاہر اقبال کی شمولیت سے آزاد کشمیر میں تحریک انصاف مزید مضبوط ہوگی‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’ہماری دیگر سیاسی رہنماؤں سے بھی بات چیت جاری ہے، آنے والےدنوں میں اہم شخصیات پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کریں گی کیونکہ ہم نے آزادکشمیر میں میرٹ کی  پامالی کو بے نقاب کر کے میرٹ کے مسئلے کو اجاگر کیا‘۔

سردار تنویر الیاس کا کہنا تھا کہ ’راجہ فاروق حیدر نے پہلے سپریم کورٹ میں واردات کی، آج وہ ہائی کورٹ میں واردات کرنے جا رہے ہیں،ہم اس میرٹ کی  پامالی کے خلاف سخت مزاحمت کریں گے کیونکہ مدت ختم ہونے والی حکومت کو ججز کی تقرری کا اختیار نہیں ہے‘۔

وزیراعلیٰ پنجاب کے معاونِ خصوصی نے دعویٰ کیا کہ ’ججزکی تقرریوں میں پیسہ چل رہا ہے، آزاد کشمیر میں بھی باقی ملک کی طرح نگراں حکومت ہونی چاہیے تاکہ شفاف انتخابات کو یقینی بنایا جاسکے‘۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ ’آزاد کشمیر انتخابات میں مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلزپارٹی دو ، دو سے زیادہ نشستیں حاصل نہیں کرسکتیں، جو لوگ ٹکٹوں کی تقسیم سے مطمئن نہیں انہیں ساتھ لے کر چلیں گے، وفاقی حکومت آزاد کشمیر انتخابات میں غیرجانبدارانہ کردار ادا کرے گی اور شفاف انتخابات کی ہر ممکن کوشش کرے گی‘۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ ’ عمران خان کا نظریہ ہی دراصل پارٹی کا نظریہ اور منشور ہے، پی ٹی آئی میں پہلے سے شامل یا نئی شمولیت اختیار کرنے والے سب عمران خان کے کارکنان ہیں‘۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے