0
0
0
نئے مالی سال 19-2018ء کے چوتھے ماہ (اکتوبر 2018ء) کے پہلے ہفتے میں مہنگائی کی شرح میں 0.54 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا جبکہ کم آمدنی والے طبقے کیلئے قیمتوں کے حساس اعشاریئے میں0.40 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا۔

پاکستان بیور و شماریات کے اعداد و شمار کے مطابق 5 اکتوبر کو ختم ہونے والے ہفتے کے دوران زندہ مرغی، انڈے، سگریٹ، ٹماٹر، لہسن، ایل پی جی، سرخ مرچ، دال مونگ، آٹا، گندم، گڑ، ویجی ٹیبل گھی، ملک پاؤڈر، بیف، کپڑے سمیت 17 اشیائے خورد و نوش ہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔
کیلے، پیاز، آلو، چینی، چنے کی دال، دال مسور، دال ماش، سمیت 7اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔
ادارہ شماریات کے مطابق پیٹرول، ہائی سپیڈ ڈیزل، مٹی کے تیل، بجلی کے نرخ، گیس نرخ، مسٹرڈ آئل، تازہ دودھ، دھی، اری چاول، نمک، باسمتی چاول، مٹن، صابن، چائے، خوردنی تیل، سمیت 29 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں استحکام رہا۔
ادارہ شماریات کے مطابق گزشتہ ہفتہ کے مقابلے میں 12-8 ہزار آمدنی، 18-12 آمدنی، 35-18 ہزار تک اور 35 ہزار روپے سے زائد آمدنی والے افراد کے گروپوں کیلئے قیمتوں کے حساس اعشاریے میں بالترتیب 0.45، 0.50 ،0.55 اور 0.59 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس