0
0
0
ملک میں سستی توانائی کی فراہمی کیلئے حکومت نے روس سے گیس خریدنے کا فیصلہ کر لیا، روس پاکستان تک آف شور پائپ لائن بچھائے گا، معاہدے پر دستخط آج ماسکو میں متوقع ہے۔

پاکستان اور روس کے تعلقات میں بہتری آ رہی ہے، ملک میں توانائی کے خاتمے کیلئے ایک بڑا قدم اٹھاتے ہوئے پاکستان اور روس میں آف شور پائپ لائن کا منصوبہ طے پا گیا ہے، معاہدے کیلئے حکومتی وفد آج ماسکو روانہ ہو گا۔
پاکستان روس سے گیس درآمد کرے گا، ڈیل کا حجم 10ارب ڈالر تک متوقع ہے، روس گوادر تک زیر سمندر گیس پائپ لائن بچھا ئے گا اور منصوبہ 4-3 سال میں مکمل ہو گا۔
پاکستان یومیہ ایک ارب مکعب فٹ تک گیس خریدے گا، روسی گیس درآمدات کا حجم 62کروڑ 10لاکھ کیوبک ہے۔
روس کی جانب سے اس معاہدے پر عمل درآمد توانائی کی بڑی کمپنی گز پراوم کرے گی جبکہ منصوبے فیزیبلیٹی بنانے کی ذمہ داری میں بھی اسی کمپنی کے پاس ہے۔
خیال رہے روس کے پاس اس وقت دنیا میں سب سے بڑے گیس کے ذخائر موجود ہیں۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس