25 جنوری, 2021
d981d984d985db8c d8b5d986d8b9d8aa daa9db92 d8afd8a7d8afd8a7 d986d8b0d8b1d98f d8a7d984d8a7d8b3d984d8a7d985 daa9
خبریںفن و ثقافت

فلمی صنعت کے ’’دادا‘‘ نذرُ الاسلام کا یومِ وفات

11 جنوری 1994ء کو پاکستان کے نام ور فلمی ہدایت کار نذرُ الاسلام وفات پا گئے تھے۔ نذرالاسلام فلمی صنعت میں ’’دادا‘‘ کے لقب سے معروف تھے۔

نذرُ الاسلام 19 اگست 1939ء کو کلکتہ میں پیدا ہوئے تھے۔ وہ نیوتھیٹرز کلکتہ کے دبستان کے نمائندہ ہدایت کار تھے۔ فنی زندگی کا آغاز ڈھاکا سے بطور تدوین کار کیا۔ پھر ہدایت کار ظہیر ریحان کے معاون بن گئے۔ چند بنگالی فلموں کے بعد ایک اردو فلم کاجل بنائی جو بے حد مقبول ہوئی۔ انھوں نے بعد میں ایک بنگالی فلم اور ایک اور اردو فلم پیاسا کی ہدایات دیں۔ 1971ء میں سقوطِ ڈھاکا کے بعد ہجرت کرکے پاکستان آگئے تھے۔

یہاں نذرالاسلام نے فلم ساز الیاس رشیدی کے ساتھ اپنے نئے فلمی سفر کا آغاز کیا۔ ان کی فلموں میں حقیقت، شرافت، آئینہ، امبر، زندگی، بندش، نہیں ابھی نہیں، آنگن، دیوانے دو، لو اسٹوری، میڈم باوری کے نام سرفہرست ہیں۔ یہ تمام فلمیں باکس آفس پر بے حد کام یاب رہیں۔

بطور ہدایات کار نذرالاسلام کی آخری فلم لیلیٰ تھی، جو ان کی وفات کے بعد نمائش پذیر ہوئی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے