0
0
0
سابق وزیر اعظم نواز شریف کے گوجرانوالہ جلسہ سے ویڈیو لنک خطاب اور اداروں پر تنقید سے ن لیگی ارکان قومی اسمبلی شدید ناراض نظر آتے ہیں ،چہ مگوئیاں شروع کر دیں۔

نجی ٹی وی نے دعویٰ کیا ہے کہ مسلم لیگ ن کے قائد میاں نواز شریف کی گوجرانوالہ تقریر پر کئی لیگی ارکان قومی اسمبلی شدید ناراض ہو گئے ۔ ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ نوازشریف کی متنازعہ تقریر کے بعد ن لیگ کے اندر گروپنگ شروع ہو  گئی .

ذرائع کے مطابق نومبر کے پہلے ہفتے میں صوبائی،قومی اسمبلی میں بڑاناراض گروپ سامنے آسکتا ہے ،نوازشریف کی متنازعہ تقریر کے بعد 13لیگی ارکان قومی اسمبلی کے آپس میں رابطے ہوئے ہیں،جس پر 13 لیگی ارکان قومی اسمبلی کی جانب سے سخت ناراضگی کااظہارکیا گیا۔

ذرائع کاکہناہے کہ نومبر کے پہلے ہفتے میں مزید ارکان سے رابطے کرکے علیحدہ گروپ تشکیل دینے پر غور شروع کر دیاہے۔

یاد رہے گوجرانوالہ میں پی ڈی ایم کے جلسہ میں گیارہ جماعتوں کے رہنمائوں نے خطاب کیا ،مقررین نے کہا کہ عمران خان کی حکومت کے جانے کا وقت آ گیا ہے،مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے پنجابی میں تقریر کا آغاز کیا انہوں نے کہا ہے کہ عوام نے فیصلہ سنا دیا حکومت الواع، عمران خان آپ کہتے تھے سارے ادارے ایک پیج پر ہیں، خان صاحب صفحہ پلٹتے دیر نہیں لگتی۔لاہور سے گوجرانوالہ تک عوام کا ایک ہی نعرہ تھا گو نیازی گو۔

بلاول بھٹو  زرداری نے کہا کہ ماضی کی طرح آج بھی غیر جمہوری قوتوں کے خلاف لڑیں گے، ہم اس نظام کا مقابلہ کرنے نکلے ہیں اور اور عوامی حکومت بنا کر رہیں گے، مہنگائی اور غربت کی بڑھتی شرح نے ملک کو دیوالیہ کر دیا، ہم تاریخی بیروزگاری، مہنگائی اور غربت کے خلاف نکلے ہیں، پی ڈی ایم کی شکل میں اس نظام کا مقابلہ کریں گے۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آج عمران خان کو لانے والوں کو بھی نواز شریف یاد آتا ہے ۔

جلسہ سے سابق وزیر اعظم نواز شریف نے بھی ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کیا لیکن اس خطاب کو کسی ٹی وی چینل پر نہیں دکھایا گیا۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس