بدھ, اکتوبر 27
daa9d985 d8b9d985d8b1 d984da91daa9db92 daa9d8a7 d8aed8b7d8b1d986d8a7daa9 d8a7d8b3d9b9d986d9b9 d8afd984 d8afdb81d984d8a7 d8afdb8cd986db92
ویڈیوزملٹی میڈیا

کم عمر لڑکے کا خطرناک اسٹنٹ دل دہلا دینے والے حادثے کا سبب بن گیا

روس میں چند نوعمر لڑکوں کی شرارت خوفناک حادثے کا سبب بن گئی، 11 سالہ لڑکا ٹرین کی پٹری پر گر گیا اور ٹرین اس کے اوپر سے اس کی ٹانگوں کو کاٹتی ہوئی چلی گئی۔

مقامی میڈیا کے مطابق 11 سالہ آرکدے اکسنوو کے ساتھ پیش آنے والے اس خوفناک حادثے نے سب کو دہلا کر رکھ دیا ہے۔

مقامی میڈیا رپورٹ کے مطابق نوعمر لڑکا یوٹیوب کے لیے ایک اسٹنٹ کے دوران ریل کی پٹری پر گر پڑا، اس اسٹنٹ کو ٹرین سرفنگ کہتے ہیں اور اس میں اسٹنٹ کرنے والا نوجوان چلتی ٹرین سے باہر فضا میں جھولتا دکھائی دیتا ہے۔

متعدد افراد اس اسٹنٹ کی خطرناکی کو سمجھے بغیر اسے کرتے ہیں اور موت کا شکار ہو جاتے ہیں۔

مذکورہ لڑکا بھی اسی اسٹنٹ کو کرتے ہوئے پٹری پر گر گیا اور ریل گاڑی اس کے اوپر سے گزرتی چلی گئی، حادثے میں لڑکے کی ایک ٹانگ کٹ کر الگ ہو گئی جبکہ دوسری بھی شدید زخمی ہے۔

لڑکا منفی 5 ڈگری سینٹی گریڈ میں اپنے خون میں لتھڑا شدید زخمی حالت میں تقریباً 1 گھنٹے تک پٹری پر پڑا رہا یہاں تک دوسری ٹرین گزری تو اس کے ڈرائیور نے خلاف اصول ٹرین روک کر لڑکے کو طبی امداد دی اور ایمرجنسی سروس کو کال کی۔

لڑکے کی والدہ کا کہنا ہے کہ ان کے بیٹے کے ساتھ 12 اور 14 سال کے 2 اور لڑکے بھی موجود تھے، انہی لڑکوں نے ان کے بیٹے کو ہراساں کیا اور اسے یہ خطرناک اسٹنٹ کرنے پر اکسایا۔

والدہ کا کہنا ہے کہ حادثے کے بعد وہ اسے خون میں تربتر چھوڑ کر نہایت آرام سے بغیر کسی خوف کے چلتے بنے، وہ چاہتے تو لوگوں کو متوجہ کرسکتے تھے اور ایسا کرنے پر وہ ہیرو بن جاتے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک پر اپنی طویل پوسٹ میں والدہ نے ان لڑکوں کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ قانون کی رو سے تمہیں کوئی سزا نہیں مل سکتی کیونکہ تم کم عمر ہو۔

انہوں نے لڑکوں کے والدین کو بھی مخاطب کیا اور کہا کہ یہ تمہاری سزا ہے کہ ہر رات تمہیں اپنے خوابوں میں خون میں لتھڑا ایک جسم دکھائی دے گا جو اپنے بازو پھیلا کر تمہاری طرف بڑھ رہا ہوگا۔

لڑکے کو بچانے والے ٹرین ڈرائیور کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے اسے دیکھا کہ تو پہلے وہ اسے برف سمجھے جو سیاہ رنگ کی دکھائی دے رہی تھی، غور کرنے پر اندازہ ہوا کہ وہ کوئی انسان تھا۔

ڈرائیور کے مطابق لڑکا منجمد کردینے والی سردی میں اوندھا پڑا تھا اور اس کا چہرہ اپنے خون کے تالاب میں ڈوبا ہوا تھا۔

اس نے کہا کہ بچے اس بات کو نہیں سمجھتے کہ اگر کوئی ٹرین آہستگی سے بھی گزر رہی ہوگی تو اس کی قوت انہیں ٹرین کے نیچے کھینچ سکتی ہے۔

دوسری جانب لڑکا 2 ہفتوں سے وینٹی لیٹر پر ہے اور اس کی حالت تشویش ناک ہے، والدہ کا کہنا ہے کہ وہ مشہور ہونے کے لیے نوجوانوں میں ایسے خطرناک اسٹنٹس کے رجحان کے خلاف آگاہی پھیلانا چاہتی ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے