0
0
0
ایک دل تو تقریباً ہر جاندار کے پاس ہے لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ ایک سے زیادہ دل رکھنے والے جاندار بھی موجود ہیں؟
جی ہاں ایک سے زائد دل رکھنے والے جاندار:

1۔سکویڈ:

1۔سکویڈ:

سکویڈ، سیفالوپوڈز کا نظام دوران خون بند (کلوزڈ سرکولیٹری سسٹم) ہوتا ہے۔ ان میں مجموعی طور پر دل کی تعداد تین ہوتی ہے۔ سیفالوپوڈا کے دو گلپھڑے(گل) دل کی صورت میں ہوتے ہیں۔  ان کو برینکیہال دل بھی کہا جاتا ہے۔ انکے علاوہ ایک اور دل ہوتا ہے جو بہت منظم طریقے سے آکسیجینیٹڈخون (آکسیجن والا صاف خون) کو گلپھڑوں کے دو دلوں سے پورے جسم میں پمپ کرتاہے۔

2۔ آکٹوپس:

2۔  آکٹوپس:

سکویڈ کی طرح، آکٹوپس بھی درجہ بندی میں سیفالوپوڈزمیں آتے ہیں۔ جس کا مطلب یہ ہے کہ انکے بھی 3 دل ہیں۔ چونکہ ان کا تعلق ایک ہی فیملی(خاندان) سے ہے اور ان کا دل بھی ایک ہی طرح سے کام کرتا ہے۔ 2 دل گلپھڑوں میں خون پمپ کرتے ہیں جبکہ ایک دل خون کی پورے جسم میں گردش ممکن بناتا ہے۔

3 دلوں کے علاوہ سکویڈ اور آکٹوپس کے بارے میں دلچسپ یہ ہے کہ ان کا خون نیلے رنگ کا ہوتا ہے۔

3۔ کیچوا (ارتھ ورم):

3۔ کیچوا (ارتھ ورم):

کیچوے بہت سے ماحولیاتی نظاموں میں ایک اہم کردارادا کرتے ہیں، جس میں پودوں کے استعمال کے لئے، نامیاتی مادوں کے اجزاء کو سادہ اجزاءمیں تحلیل کرنا اور مٹی کی ذرخیزی کا سبب بننا سب سے اہم ہے۔ اگرچہ کیچوے بہت عام نظرآنے والے جاندار ہیں مگر ان کے اندر بہت زیادہ غیر معمولی نظام موجود ہے، ان میں پیچیدہ اندرونی اعضاء بھی شامل ہیں، جیسا کہ دل کی طرح کے عضو کے پانچ جوڑے موجود ہوتے ہیں جنھیں ایورٹک آرچز کہا جاتا ہے جو ان کے جسم کے باقی حصوں میں آکسیجینیٹڈ خون (آکسیجن والا صاف خون) پمپ کرتا ہے۔
درحقیقت، "دل" کی تعریف کے مطابق کہا جاسکتا ہے کہ زمینی کچیوں میں 10 یا صفر دل ہوتے ہیں۔

4۔ ہیگ مچھلی (سانپ نما مچھلی):

 4۔ ہیگ مچھلی (سانپ نما مچھلی):

ہیگ مچھلی کا ایک نظام دوران خون چار دلوں پر مشتمل بہت ہی ابتدائی (پریمیٹیو) نوعیت کا ہے۔ تین خانوں والا ایک دل، بریکیئل (بازو نما)دل کے طور پر جانا جاتا ہے جو اہم پمپ کے طور پر کام کرتا ہے۔ جبکہ دوسرے تین دل معاون پمپ کے طور پر کام کرتے ہیں۔
ان میں 5 سے 15 تک گلپھڑوں کے جوڑے بھی ہوتے ہیں۔

5۔ انسان:

5۔ انسان:

کوئی بھی انسان پیدائشی طور دو دلوں کے ساتھ پیدانہیں ہوتا۔ لیکن دل کی انتہائی بیماری (کارڈیو مایوپیتھی) دل کے پٹھے کے خلل کی صورت میں، آپ کے دل کی جگہ ڈونر کا دل لگانے (ٹرانسپلانٹ کرنے) کی بجائے ڈاکٹر آپ کے دل پر دوسرے دل کی پیوندکاری کرسکتے ہیں۔
دل کا یہ ٹرانسپلانٹ آپریشن یقیناً طب میں ترقی کی بدولت ممکن ہوا ہے۔ اسے پیگی بیک ہارٹ (دل) ٹرانسپلانٹ کا نام دیا گیا ہے۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس