0
0
0
چھ سالہ سعودی لڑکی نے کرونا وائرس لاک ڈاؤن کے دوران قرآن پاک حفظ کر لیا۔

6سالہ سعودی لڑکی نے کرونا وائرس لاک ڈاؤن کے دوران قرآن پاک حفظ کر لیا۔چھ سالہ سعودی لڑکی نے کرونا وائرس لاک ڈاؤن کے دوران قرآن پاک حفظ کر لیا۔

سعودی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق دارالحکومت ریاض سے تعلق رکھنے والی 6 سالہ بچی نے مارچ میں شروع ہونے والے کرونا لاک ڈاؤن کو اپنی آخرت سنوارنے کےلیے غنیمت جانا اور اس مختصر سے وقت میں قرآن مجید حفظ کرنے کی سعادت حاصل کر لی۔

حنین نامی بچی مکنون سوسائٹی نامی تحفیظ و تدریس قرآن کے ادارے سے منسلک تھی لیکن لاک ڈاؤن کے باعث تعلیمی سرگرمیاں بھی معطل ہوئیں تو بچی نے گھر میں رہ کر زیادہ تیزی سے قرآن پاک کو حفظ کرنا شروع کرد یا۔

چھ سالہ حنین کی والدہ کا کہنا ہے کہ میری بچی نے دو برس کی عمر سے ہی قرآن مجید کی چھوٹی سورتوں کو حفظ کرنا شروع کر دیا تھا اور جب وہ 3سال کی ہوئی تو مکمل طور پر راغب قرآن ہوئی اور اسی عمر میں آدھا سپارہ حفظ کر لیا۔

سعودی بچی کی والدہ کا کہنا تھا کہ حنین کی قرآن مجید سے محبت کو دیکھتے ہوئے ہم نے اسے تحفیظ و تدریس سے قرآن مجید پر لگا دیا، جس پر حنین نے لاک ڈاؤن سے پہلے تک 19 سپارے حفظ کرلیے۔

سعودی خاتون کا کہنا تھا کہ ان کی بیٹی نے لاک ڈاؤن کو بہترین موقع جانتے ہوئے 5 سے 6 ماہ کے دوران 11 سپارے تیز سے حفظ کرکے سب کو حیران کر دیا۔

آپ کا ردعمل؟

پوسٹ کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔


فیس بک کمنٹس